Watch videos with subtitles in your language, upload your videos, create your own subtitles! Click here to learn more on "how to Dotsub"

Who is Dajjal?Every Pakistani must watch it part -6

0 (0 Likes / 0 Dislikes)
میں چاہتا ھوں کہ آپ جان لیں کہ ٹیکنالوجی جو اسمیں استعمال ھوئی برطانیہ نے اس کی شروعات کی حضور صلی علیہ وسلم نے فرمایا کہ دجال کے دور میں ربا (سود)بھی عام ھو گا۔سود کی ایک شکل نفع پہ رقم کا لین دین بھی ھے۔۔ لیکن ربا کی ایک اور شکل دھوکے پہ مبنی بزنس ھے۔جس میں ایک غیر معمولی نفع حاصل کرتا ھے۔آج ساری دنیا کی معیشت ربا کے شکنجے میں ھے۔ جدید سودی معیشت کی شروعات برطانیہ سے ھوئی۔یہ بینک آف انگلینڈ ھے جو کہ سترھویں صدی کے آخر میں قائم ھوا۔ جس نے آج کی سودی معیشت کا آغاز کیا۔نہ صرف اس بینک نے نفع پہ لین دین کا آغاز کیا بلکہ برطانیہ قرضہ دینے والا سب سے بڑا ملک بن گیا اور اصلی کرنسی کے بجائے کاغذی کرنسی متعارف کرائی۔بینک آف انگلینڈ نے سترھویں صدی کے آخر میں کاغذی کرنسی جاری کرنا شروع کی ۔جب آپ پیپر کرنسی جاری کرتے ھیں تو آپ کی سودی معیشت کی استعداد غیر معمولی حد تک بڑھ جاتی ھے۔ لیکن ھم اس کے بارے میں آنے والے لیکچر میں بات کریں گے جس کا عنوان ھے اسلام اور انٹرنیشنل معاشی نظام۔حضور صلی علیہ وسلم نے فرمایا کہ دجال کے آخری لوگ عورتیں ھوں گی آدمی گھر واپس آئے گا اور اپنی بیوی،بہن،بیٹی کو دجال کے فتنے سے بچانے کے باندھ دے گا۔جب دجال کا فتنہ اپنے عروج پہ ھو گا تو عورتوں کی دنیا میں کچھ عجیب واقعہ رونما ھو گ جو کہ سراسرّعورتوں کی ترقی کے نام پہ دھوکا ھو گا لیکن عورتیں آگے بڑھ کر اسے گلے لگا لیں گی۔عورتوں کی دنیا میں ایسا انقلاب آئے گا جس کی انسانی تاریخ میں مثال ملنی مشکل ھے اور یہ دجال کا شعبدہ ھو گا۔آپ بھی مجھ سے اتفاق کریں گے کہ حضور صلی علیہ وسلم کی پیش گوئی آج کے حقوق نسواں کے انقلاب کے طور سچ ثابت ھو گئی ھے یہ بھی ایک ٹاپک ھے جو کہ آنے والے لیکچرز میں زیرِ بحث لایا جائے گا۔لیکن کیا آپ جانتے ھیں کہ جزیرہ برطانیہ نے حقوقِ نسواں کی تحریک کا باقاعدہ آغاز کیا ۔میں آپ کو یہ ساری معلومات اس لئے دے رہا ھوں کہ آپ بحث کر سکیں کہ تمیم داری کا جزیرہ برطانیہ ھے ،میں نے ایک بات نوٹس کی ھے کہ جب دجال آزاد ھوا (جب اس کا ایک دن 100 سال کے برابر تھا) برطانیہ اس کا ہیڈ کوارٹر تھا ۔میں نے یہ بات نوٹ کی ھے جیسا کہ میں انٹرنیشنل رہلیشنز کا سٹوڈنٹ ھوں،کہ برطانیہ بہت عجہب طریقے سے حکمران ریاست بن جاتی ھے۔ آپ کیسے وضاحت کریں گے کہ یورپ کا ایک چھوٹا سا غیر مشہور جزہرہ جو کہ دنیا کی تاریخ میں کبھی ظاہر نہ ھوا جسے نپولین نے بھی کسی اہمیت کا حامل نہ جانا اچانک دنیا کا حکمران بن جاتا ھے۔ صرف ایک شخصیت جو کہ برطانیہ کے اچانک ظہور اور دنیا کی حکمران ریاست بن جانے کی وضاحت کر سکتے ھیں وہ نبی صلی علیہ وسلم ھیں ۔یہ صرف دجال کا ہی کام ھے۔ابھی تک 1940 میں ھوا پہ کسی کی حکمرانی قائم نہیں ھوئی تھی۔ آرمی زمین اور نیوی سمندر کو کنٹرول کرتی تھی اور برطانیہ ساری دنیا کے سمندروں پہ قابض تھا یہ حادثاتی طور پہ نہیں تھا۔کیونکہ برطانیہ دنیا کے پانیوں کو کنٹرول کر رہا تھا یہودی تحریک ساوتھ افریقہ کی ہیروں کی کان سے حاصل ھونے والی رقم پہ قابض ھو چکی تھی ۔1914 میں وہ دہشت گردی کی آڑ میں جنگ کرنے کے لئے تیار ھو چکے تھے ۔(ایک آرچ ڈوک فرانس فرڈینینڈ کو قتل کر دیا گیا تھا اس لئے یہ جنگ لڑی گئی۔

Video Details

Duration: 9 minutes and 59 seconds
Country: Saudi Arabia
Language: English
Genre: None
Views: 65
Posted by: knight on Dec 18, 2011

a prominent scholar of islam.

Caption and Translate

    Sign In/Register for Dotsub to translate this video.