Watch videos with subtitles in your language, upload your videos, create your own subtitles! Click here to learn more on "how to Dotsub"

who is dajjal? Every pakistanis must watch it part-2

0 (0 Likes / 0 Dislikes)
پچھلے لیکچر میں ہم نے اللہ کے اسرائیلی قوم سے کئے گئے وعدے کے متعلق بات کی کہ اللہ ایک رسول بیھجنے والا ہے جو کہ“المسیح“ کے نام سے مشہور ہو گا اور دنیا پر انصاف سے حکو مت کرے گا۔(جیسا کہ نبی صلی علیہ وسلم نے بھی تصدیق کی۔)جب یہ وعدہ کیا گیا تو اسرائیلی بابل (عراق) میں تھے۔اور زمینِ مقدس(فلسطین) زیرِنگوں تھی ۔اسرائیلی یہ سجھتے تھے کہ اگر “مسیح علیہ سلام “ کو اللہ کے وعدے کے مطابق آنا ہے تو حضرت عیسی علیہ سلام کے زریعے کچھ منطقی کام بھی ضرور انجام بائیں گے۔جن میں نمبر1:وہ زمینِ مقدس کو آزاد کرائیںگے۔ نمبر2: وہ اسرائیلی قوم کو دوبارہ یہاں لا کر آباد کریں گے۔نمبر3:وہ اسرائیلی حکومت بحال کریں گے جس کی بنیاد حضرت داود و سلیمان علیہ سلام نے رکھی تھی۔ نمبر4: اور اسرائیل کی حکومت ایک بار پھر دنیا کی حکمران بن جائے گی۔اور حضرت عیسی دنیا پر(حضرت داود کے تختِ حکومت سے)حکومت کریں گے ۔اور یہ حکومت دائمی ھو گی۔تقریبا“ سو سال بابل میں رہنے کے بعد اچانک واقعات رونما ھونا شروع ھو گئے۔اور زمین مقدس آزاد ھو گئی۔ایرانی حکومت نے بابل کو شکست دے دی۔اسرائیلی قوم کو اپنے وطن واپس آنے کی اجازت مل گئی۔ زمین مقدس پہ اسرائیل کی حکومت بحال ھو گئی۔اور مسجد جو کہ حضرت سلیمان نے تعمیر کی تھی دوبارہ تعمیر کی گئی ۔اب اسرائیلی قوم کا جوش عروج پہ پہنچ گیا۔کہ حضرت عیسی ابھی تبھی میں آنے والے ہیں۔ سنہری دور واپس آ رہا ھے۔ھم ایک بار پھر دنیا پہ حکومت کرنے والے ھیں اور حضرت مسیح آ گئے۔لیکن جب وہ آے تو کچھ یہودیوں نے انھیں قبول کیا ۔لیکن حکومت ٰ(رباعیوں )نے انکا انکار کیا۔ ۔۔انھوں نے کیوں حضرت عیسی کو رد کیا؟جواب ھے اللہ ان کا امتحان لے رہا تھا۔جیسا کہ وہ صرف ایک آنکھ سے دیکھ رھے تھے تو وہ اس امتحان میں ناکام ھو گئے۔انھوں نے کہا کہ اس کی ماں مریم علیہ سلام نے گناہ عظیم کیا ھے (نعوز بااللہ)۔اور یہ بچہ حرامی ھے۔ اگر وہ دل کی اندرونی آنکھ سے دیکھتے تو جان جاتے کہ ظاہرو باطن ایک دوسرے کی ضد ہیں۔ وہ مریم نے کنواری ھتے ھوے اس بچے کو جنم دیا۔لیکن انھوں نے اندرونی آنکھ سے نہ دیکھا۔ آج کا لیکچر مجھے اور آپ کو یہ یاد دلانے کے لیے ھے کہ ھم مختلف طریقوں سے دھوکا کھا سکتے ہیں یہاں تک کہ ھم اندرونی آنکھ سے دیکھ لیں۔ اور جب انھوں نے حضرت عیسی کو اپنی آنکھوں کے سامنے صلیب پر لتکے دیکھا تو کہا یہ مسیح نہیں ھو سکتا۔کیونکہ یہ مر چکا ھے۔اور زمین مقدس رومیوں کے قبضے میں ھے اور نہ اس نے حضرت داود کے تخت حکومت سے حکومت کی اور نہ ہی سنہری دور واپس آیا۔ ۔سو اب یہ شک و شبہہ سے بالا تر ھے کہ یہ المسیح نہیں ھے۔وہ کیا ھے جو ان میں سے کوئی چھ سوسال تک نہ جان سکا؟ یہاں تک کہ قرآن نازل ھوا۔وہ نہیں جانتے تھے کہ نہ انھوں نے حضرت عیسی کو صلیب پہ لٹکایا گیا نہ وہ مرے۔اصل میں حقیقت کچھ اور تھی۔اللہ نے انھیں اوپر اٹھا لیا اور وہ ایک دن واپس آئیں گے اور دنیا پہ حکومت کریں گے۔خواہ ہو این او کی قراردادیں کچھ بھی کہتی ھوں۔وہ آئیں گے اور دنیا پہ عدل وانصافسے حکومت کریں گے۔ اور وہ زمین مقدس (فلسطین)سے دنیا پہ حکومت کریں گے۔جو کہ حضرت ابراہیم علیہ سلام کے دین حنیف پہ قائم کی گئی تھی۔ اور ان کی حکومت دائمی ھو گی۔لیکن وہ یہ نہیں جانتے تھےاس لئے وہ المسیح کے آنے کا انتظار کر رھے ہیں حضرت محمد صلی علیہ وسلم نے فرمایا کہ اللہ نے ایک نفس پیدا کیا ھے جسے اینٹی کرائسٹ کا مشن سونپا ھے۔وہ حضرت مسیح ھونے کا جھوٹا دعوی کرے گا۔ وہ ھے “دجال جھوٹا مسیح “۔دجال کا مطلب ھے دھوکے باز اس نے دھوکا دہی میں پی۔ایچ۔ڈی کر رکھی ھے۔جھوٹے مسیح سے جڑی ہر چیز ظاہروباطن میں ایک دوسرے کی ضد ھے گر جھوٹے مسیح نے خود کو کامیابی سے مسیح بنا کر پیش کرنا ھے تو پھر اس میں یہ خصوصیت بھی ھونی چاھیے کہ وہ حضرت مسیح کی طرح یروشلم سےدنیا پہ حکومت کرنے کی کوشش کرے۔تب ھی وہ یہ اعلان کر سکتا ھے کہ میں مسیح ھوں۔

Video Details

Duration: 9 minutes and 59 seconds
Country: United States
Language: English
Genre: None
Views: 64
Posted by: knight on Dec 16, 2011

prominent islamic scholar of today

Caption and Translate

    Sign In/Register for Dotsub to translate this video.